کتا

کتا

germanshepherdsf1 کتا بڑی دیر سے بھونک رہا تھا ساتھ ہی اپنے بدنماء دانتوں کی نمائش کرکے غرّا بھی رہا تھا ۔ سامنے کھڑا آدمی مسکین صورت بنائے بڑی عاجزی سے کتے کو سمجھانے کی کوشش کر رہا تھا ۔
” کتے صاحب ! آپ کی مجھ سے کیا دشمنی ہے ، کیوں میرے پیچھے پڑے ہو؟ مجھے میری راہ جانے دو اور تم اپنا راستہ لو”
پاس کسی اوٹ میں کھڑا ایک شخص جو کافی دیر سے یہ تماشہ دیکھ رہا تھا تنگ آکر بلند آواز میں بولا!
“کیوں فلسفہ بگھارتے ہو ، اس کتے کو دھتکارتے کیوں نہیں اور پتھر اٹھا کر اسے مارتے کیوں نہیں؟”
جواب ملا کہ وہ تو ہے ہی کتا اوراس کا کام ہے بھونکنا جبکہ میں ٹہرا ایک انسان ۔ اب میں بھی بھونکنے لگوں گا تو اس میں اور مجھ میں کیا فرق رہ جائے گا؟

0 Shares

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

جملہ حقوق بحق چنگیزی ڈاٹ نیٹ محفوظ ہیں